Sufinama

کاش مری جبین شوق سجدوں سے سرفراز ہو

بیدم شاہ وارثی

کاش مری جبین شوق سجدوں سے سرفراز ہو

بیدم شاہ وارثی

MORE BY بیدم شاہ وارثی

    کاش مری جبین شوق سجدوں سے سرفراز ہو

    یار کی خاک آستاں تاج سر نیاز ہو

    ہم کو بھی پائمال کر عمر تری دراز ہو

    مست خرام ناز ادھر مشق خرام ناز ہو

    چشم حقیقت آشنا دیکھے جو حسن کی کتاب

    دفتر صد حدیث راز ہر ورق مجاز ہو

    سامنے روئے یار ہو سجدے میں ہو سر نیاز

    یوں ہی حریم ناز میں آٹھوں پہر نماز ہو

    اس کے حریم ناز میں عقل و خرد کو دخل کیا

    جس کی گلی کی خاک کا ذرہ جہان راز ہو

    تیری گلی میں پا کے جا جائے کہاں ترا گدا

    کیوں نہ وہ بے نیاز ہو تجھ سے جسے نیاز ہو

    بیدمؔ خستہ ہجر میں بن گئی جان زار پر

    جس نے دیا ہے درد دل کاش وہ چارہ ساز ہو

    مآخذ:

    • کتاب : نورالعین: مصحف بیدمؔ (Pg. 50)
    • Author : بیدم شاہ وارثی
    • مطبع : شیخ عطا محمد، لاہور (1935)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY