Sufinama

جب تک مرے ہونٹوں پہ ترا نام رہے گا

فنا بلند شہری

جب تک مرے ہونٹوں پہ ترا نام رہے گا

فنا بلند شہری

MORE BYفنا بلند شہری

    جب تک مرے ہونٹوں پہ ترا نام رہے گا

    دل بے خبر گردش ایام رہے گا

    مٹ جائے گا ہر نقش خیال غم ہستی

    لیکن ورق دل پہ ترا نام رہے گا

    کیوں ڈر ہے گناہوں کے سبب حشر کے دن سے

    ہم جانتے ہیں ان کا کرم عام رہے گا

    پیغام تو آئیں گے بہت دیر و حرم سے

    لیکن تری چوکھٹ سے مجھے کام رہے گا

    مے خانہ سلامت ہے اگر تیری نظر کا

    لبریز مئے عشق سے ہر جام رہے گا

    دامن ہے اگر تیرا مرے دست طلب میں

    آغاز سے بہتر مرا انجام رہے گا

    جائے گی نہ دل سے ترے عارض کی محبت

    زلفوں کا تصور مجھے ہر شام رہے گا

    آنکھیں ہی نہیں تیری فناؔ دید کے قابل

    تو جلوہ گہہ یار میں ناکام رہے گا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY