Sufinama

نہ تو ملنے کے اب قابل رہا ہے

مظہر مرزا جان جاناں

نہ تو ملنے کے اب قابل رہا ہے

مظہر مرزا جان جاناں

MORE BYمظہر مرزا جان جاناں

    نہ تو ملنے کے اب قابل رہا ہے

    نہ مج کو وہ دماغ و دل رہا ہے

    یہ دل کب عشق کے قابل رہا ہے

    کہاں اس کو دماغ و دل رہا ہے

    خدا کے واسطے اس کو نہ ٹوکو

    یہی اک شہر میں قاتل رہا ہے

    نہیں آتا اسے تکیہ پہ آرام

    یہ سر پاؤں سے تیرے ہل رہا ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY