Sufinama

سِرِّ اسرارِ ایں دانم من

مخدوم سجاد پاک

سِرِّ اسرارِ ایں دانم من

مخدوم سجاد پاک

MORE BYمخدوم سجاد پاک

    سِرِّ اسرارِ ایں دانم من

    و حجاب خودی نہانم من

    1. مجھے تمام اسرار کا علم ہے لیکن مجھ پر میری خودی کا حجاب پڑا ہوا ہے۔

    ہم جہانیم و در جہانم من

    بے نشان و گہے نشانم من

    2. میں جہانی بھی ہوں اور جہان میں بھی ہوں، میں کبھی بے نشان تو کبھی نشان والا ہوں۔

    علم ذاتِ خودم بصدق و یقیں

    گاہِ وہم و گہے گمانم من

    3. مجھے اپنی ذات کا پورا علم تو ہے لیکن میں کبھی وہم تو کبھی گمان میں مبتلا ہوں۔

    وز کہ پرسم حکایت من و تو

    تو زبان ہستی و بیانم من

    4. میں کس سے اپنی اور تیری حکایت پوچھوں تو ہستی کی زبان ہے اور میرا بیان بھی۔

    ساجدؔ کعبہ ساکنِ دیرم

    شورِ ناقوس وہم اذانم من

    5. میں کعبہ میں سجدہ کرنے والا اور دیر میں سکونت اختیار کرنے والا ہوں، میں اذان بھی ہوں اور شور ناقوس بھی۔

    مأخذ :
    • کتاب : بزم ابوالعلا، جلد دوم (Pg. 212)
    • Author : انجم اکبرآبادی
    • مطبع : وابستگان ابوالعلائیہ، کراچی (1989)
    • اشاعت : First

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY