Sufinama

حسن بتاں کا عشق میری جان ہو گیا

فنا بلند شہری

حسن بتاں کا عشق میری جان ہو گیا

فنا بلند شہری

MORE BYفنا بلند شہری

    حسن بتاں کا عشق میری جان ہو گیا

    یہ کفر اب تو حاصل‌ ایمان ہو گیا

    اے ضبط‌ دل یہ کیسی قیامت گزر گئی

    دیوانگی میں چاک گریبان ہو گیا

    وہ بن سنور کے پھر مری محفل میں آ گئے

    بیٹھے بٹھائے حشر کا سامان ہو گیا

    کر کے سنگھار آئے وہ ایسی ادا کے ساتھ

    آئینہ ان کو دیکھ کر حیران ہو گیا

    دیکھا جو اس صنم کو تو محسوس یہ ہوا

    جلوہ خدا کا صورت انسان ہو گیا

    سب میرا عشق دیکھ کے لیتے ہیں تیرا نام

    میں بھی ترے جمال کی پہچان ہو گیا

    پوجا کریں گے اس کی فناؔ ہم تمام عمر

    وہ بت ہمارے واسطے بھگوان ہو گیا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY