Font by Mehr Nastaliq Web
Sufinama

رہروان شوق نے جس دم علم آگے دھرا

انشا اللہ خان

رہروان شوق نے جس دم علم آگے دھرا

انشا اللہ خان

MORE BYانشا اللہ خان

    رہروان شوق نے جس دم علم آگے دھرا

    سدرہ کے سائےمیں دم لے، پھر قدم آگے دھرا

    تجھ بن، اے ساقی، شرابِ سبز کا ساغر نہیں

    ہے مری آنکھوں میں گویا جامِ سم آگے دھرا

    دیکھتے ہی کچھ لگا تیوری چڑھانے کل وہ شوخ

    پھولوں کا دونا جو میں نے کر کے دم، آگے دھرا

    جس نے یارو مجھ سے دعویٰ شعر کے فن میں کیا

    میں نے لے کر اس کے کاغذ اور قلم آگے دھرا

    بیٹھتا ہے جب تندیلا شیخ آکر بزم میں

    اک بڑا مٹکا سا رہتا ہے شکم آگے دھرا

    سید انشاؔ واں کریں ہیں سیر بامِ عرش کا

    یاں کمندِ آہ کا ہے پیچ و خم آگے دھرا

    مأخذ :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے