Font by Mehr Nastaliq Web
Sufinama

پرتو فگن اس دل میں ہے وہ ماہِ مبیں آج

شاہ کبیر داناپوری

پرتو فگن اس دل میں ہے وہ ماہِ مبیں آج

شاہ کبیر داناپوری

MORE BYشاہ کبیر داناپوری

    پرتو فگن اس دل میں ہے وہ ماہِ مبیں آج

    کیا مطلع خورشید ہے یہ جان حزیں آج

    ہے سلطنت دشت مرے زیر نگیں آج

    میں قیس کا البتہ ہوں سجادہ نشیں آج

    گھِس گھِس کے مٹا دوں گا میں تقدیر کا لکھا

    ہے سنگ در اس شوخ کا اور اپنی جبیں آج

    ہوں میں متلاشی حرم و دیر میں اس کا

    عرفاںؔ نہ پتا اس کا وہاں ہے نہ یہیں آج

    مأخذ :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے