Font by Mehr Nastaliq Web
Sufinama

دل عشق میں بے پایاں سودا ہو تو ایسا ہو

ابن انشا

دل عشق میں بے پایاں سودا ہو تو ایسا ہو

ابن انشا

MORE BYابن انشا

    دل عشق میں بے پایاں سودا ہو تو ایسا ہو

    دریا ہو تو ایسا ہو صحرا ہو تو ایسا ہو

    اک خال سویدا میں پہنائی دو عالم

    پھیلا ہو تو ایسا ہو سمٹا ہو تو ایسا ہو

    اے قیس جنوں پیشہ انشاؔ کو کبھی دیکھا

    وحشی ہو تو ایسا ہو رسوا ہو تو ایسا ہو

    دریا بہ حباب اندر طوفاں بہ سحاب اندر

    محشر بہ حجاب اندر ہونا ہو تو ایسا ہو

    ہم سے نہیں رشتہ بھی ہم سے نہیں ملتا بھی

    ہے پاس وہ بیٹھا بھی دھوکا ہو تو ایسا ہو

    وہ بھی رہا بیگانہ ہم نے بھی نہ پہچانا

    ہاں اے دل دیوانہ اپنا ہو تو ایسا ہو

    اس درد میں کیا کیا ہے رسوائی بھی لذت بھی

    کانٹا ہو تو ایسا ہو چبھتا ہو تو ایسا ہو

    ہم نے یہی مانگا تھا اس نے یہی بخشا ہے

    بندہ ہو تو ایسا ہو داتا ہو تو ایسا ہو

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    عابدہ پروین

    عابدہ پروین

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے