Sufinama

جو بنے آئینہ وہ تیرا تماشہ دیکھے

شاہ اکبر داناپوری

جو بنے آئینہ وہ تیرا تماشہ دیکھے

شاہ اکبر داناپوری

MORE BYشاہ اکبر داناپوری

    جو بنے آئینہ وہ تیرا تماشہ دیکھے

    اپنی صورت میں ترے حسن کا جلوہ دیکھے

    ہائے کس طرح تجھے عاشق شیدا دیکھے

    تیرا سایہ بھی نہیں ہے کہ جو سایہ دیکھے

    تیری شانیں ہیں ہزاروں ترے جلوے لاکھوں

    دو ہی آنکھیں ہوں ملی جس کو وہ کیا کیا دیکھے

    قیس کو ہوش نہیں لب پہ انا لیلیٰ ہے

    اپنے دیوانے کو آ کر ذرا لیلیٰ دیکھے

    دیکھنے والے ترے دیکھتے ہیں یوں تجھ کو

    جیسے دریا کی طرف پیاس کا مارا دیکھے

    کیا سمجھ رکھا ہے اللہ کو تو نے اکبرؔ

    آنکھیں کھولے ہوئے بیٹھا ہے کہ جلوہ دیکھے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    پرویز عالم

    پرویز عالم

    مأخذ :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY