Font by Mehr Nastaliq Web
Sufinama

جب عشق_محمد نے سینے میں ضیا ڈالی

عاصی گیاوی

جب عشق_محمد نے سینے میں ضیا ڈالی

عاصی گیاوی

MORE BYعاصی گیاوی

    جب عشق محمد نے سینے میں ضیا ڈالی

    تصویر سیہ کاری قدرت نے مٹا ڈالی

    رحمت کی نظر تم نے مجھ عاصی پہ کیا ڈالی

    بگڑی ہوئی محشر میں سب بات بنا ڈالی

    اللہ ہوئے عاشق جبریل بنے قاصد

    جو بات نہ دیکھی تھی دنیا کو دکھا ڈالی

    تھے مصر کی گلیوں میں یوسف کے فقط چرچے

    پر حسن محمدؐ نے کیا دھوم مچا ڈالی

    مسرور ہوئیں آنکھیں پر نور ہوئیں آنکھیں

    جس جس نے محمدؐ کی خاک کف پا ڈالی

    نازاں ہوں نہ کیوں عاصیؔ حضرت کی شفاعت پر

    سب آگ گناہوں کی رحمت نے بجھا ڈالی

    دے ابر کرم اب تو رحمت کا کوئی چھینٹا

    ارمانوں کی سب کھیتی حسرت نے جلا ڈالی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے