Font by Mehr Nastaliq Web
Sufinama

کبھی خواب میں آ میرے کملی والے

عاصی گیاوی

کبھی خواب میں آ میرے کملی والے

عاصی گیاوی

MORE BYعاصی گیاوی

    کبھی خواب میں آ میرے کملی والے

    کبھی روئے روشن دکھا کملی والے

    سمایا ہوا ہے تو ذات خدا میں

    تری ذات میں ہے خدا کملی والے

    کسی طرح ہو قید غم سے رہائی

    ہمارے لئے بھی دعا کملی والے

    مری ناؤ نکلے گی کب تک بھنور سے

    کہ تو ہے مرا نا خدا کملی والے

    محبت کا بیمار دم توڑتا ہے

    نہیں اب امید شفا کملی والے

    مجھے بھی شراب محبت پلا کر

    تو مستانہ اپنا بنا کملی والے

    ہوا شق قمر اک اشارہ سے کس کے

    تھا ادنیٰ ترا معجزہ کملی والے

    بھرے دم کوئی کس طرح عاشقی کا

    فدا تجھ پہ خود ہے خدا کملی والے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے