Font by Mehr Nastaliq Web
Sufinama

عجب شان ہے شان_خدا مدینے میں

جوہر نوری

عجب شان ہے شان_خدا مدینے میں

جوہر نوری

MORE BYجوہر نوری

    عجب شان ہے شان خدا مدینے میں

    نبی کا نور ہے جلوہ نما مدینے میں

    تڑپ رہی ہے طبیعت مری زمانے سے

    اڑا کے مجھ کو تو لے چل صبا مدینے میں

    شفا نہ ہوتی ہو جس کو کہو چلا جائے

    کھلا ہے دفتر دار الشفا مدینے میں

    نثار موت بھی سو جی سے ایسی مورت پر ہو

    کہ جس کو لائی پکڑ کر قضا مدینے میں

    پہنچ کے روضۂ اقدس کی جالیاں چوموں

    یہ آرزو ہے مری یا خدا مدینے میں

    وہ دن بھی آئے الٰہی ہند کے بدلے

    جناب جوہرؔ کا گھر ہو بنا مدینے میں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے