Sufinama

دلا خاک رہ کوئے محمد شو محمد شو

شاہ نیاز احمد بریلوی

دلا خاک رہ کوئے محمد شو محمد شو

شاہ نیاز احمد بریلوی

MORE BYشاہ نیاز احمد بریلوی

    دلا خاک رہ کوئے محمد شو محمد شو

    ز ہر سوئے بیا سوئے محمد شو محمد شو

    اے دل! خاک راہ کوچۂ محمد بن، محمد بن

    ہر طرف سے آ جانب محمد ہو، محمد ہو

    بہ ہر دم سجدۂ جاں سوئے ابروئے محمد کن

    بہ روئے قبلۂ روئے محمد شو محمد شو

    ہر وقت روح کا سجدہ محمد کے ابرو کی طرف کر

    متوجہ قبلۂ رخ محمد ہو، محمد ہو

    تجرد پیشہ گیر از قید عالم وارہاں خود را

    اسیر حلقۂ موئے محمد شو محمد شو

    دنیا کی قید سے تنہائی اختیار کر، خود کو آزاد کر

    گرفتار پیچ زلف محمد ہو، محمد ہو

    بہ اخلاق الٰہی متصف بودن اگر خواہی

    سراپا سیرت و خوئے محمد شو محمد شو

    اگر تو خلق الہی سے متصف ہونا چاہتا ہے

    تو سر سے پیر تک خصلت و سیرت محمد ہو، محمد ہو

    بکن خالی مسام از بوئے گلہائے جہاں اے دل

    بیا دل دادۂ بوئے محمد شو محمد شو

    اے دل دنیا کے پھولوں کی خوشبو سے اپنے مشام کو خالی کر

    آ دلدادۂ خوشبوئے محمد ہو، محمد ہو

    نیازؔ اندر دلت گر مہر عرفاں خدا باشد

    فدائے شان دل جوئے محمد شو محمد شو

    اے نیازؔ ! اگر تیرے دل میں اللہ کے عرفان کی محبت ہو

    تو نثار شان و عظمت دلپسند محمد ہو، محمد ہو

    مأخذ :
    • کتاب : دیوان نیاز بے نیاز (Pg. 101)
    • اشاعت : First

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY