Sufinama

ہے رخ کا پہلو_نشیں سہرا

بیدم شاہ وارثی

ہے رخ کا پہلو_نشیں سہرا

بیدم شاہ وارثی

MORE BYبیدم شاہ وارثی

    ہے رخ کا پہلو نشیں سہرا

    نہ ہو یہ کیوں مہ جبیں سہرا

    قرآن سعدین سامنے ہے

    حسیں دولہا حسیں سہرا

    جبیں سہرے کو چومتی ہے

    کہ چومتا ہے جبیں سہرا

    ہوا سے لڑیاں لچک رہی ہیں

    ہے کس قدر نازنیں سہرا

    یہ الجھا کنگنے سے اس لئے ہے

    کہ چوم لے آستیں سہرا

    چھپا ہے مقنع میں کس ادا سے

    بنا ہے پردہ نشیں سہرا

    نظر میں کھپ جائے سب کی بیدمؔ

    ہر اک کے ہو دل نشیں سہرا

    مآخذ :
    • کتاب : دیوان بیدم شاہ وارثی (Pg. 80 E-78)
    • Author : بیدم شاہ وارثی
    • مطبع : ہندوستانی بک ڈپو (1935)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY