Sufinama

جب جب مان دہن کرے تب تب ادھک سہاگ

    اس قسم کی بناوٹ اس گروپ کے لئے قبول کی گئی ہے جن کے لیے کہا گیا ہے، میں پیٹھ پھیرنے والوں کا مشتاق ہوں۔ اس سے مراد ان لوگوں کی کامیابی ہے، کیونکہ یہ بات کہ جب بھی وہ کسی گناہ کا خیال کرتے ہیں ان کیلئے زیادہ رحم کرتا ہوں۔ یہی ان لوگوں کی کامیابی کا نشان ہے۔ اس قسم کی تخلیقات کا ایک دوسرا معنی بھی ہے جو اس سے بھی زیادہ باطنی ہے اور اسے زیادہ واضح طور پر کہنا ممکن نہیں مگر اس آیت میں اس کی طرف اشارہ ہے۔

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY