Font by Mehr Nastaliq Web
Sufinama

آکاش کی جگ مگ راتوں میں جب چاند ستارے ملتے ہیں

عبدالہادی کاوش

آکاش کی جگ مگ راتوں میں جب چاند ستارے ملتے ہیں

عبدالہادی کاوش

MORE BYعبدالہادی کاوش

    آکاش کی جگ مگ راتوں میں جب چاند ستارے ملتے ہیں

    دل دے دے صنم کو تو بھی یہ قدرت کے اشارے ملتے ہیں

    اس کومل سندر دھرتی پر ہر یگ میں دل کو اے ناداں

    اک بھولی بھالی صورت میں بھگوان ہمارے ملتے ہیں

    خود پریم کی جوت جلا کر یہ تن من میں آگ لگا کر یہ

    کیا حال ہے تیرا کہتے ہیں جب عشق کے مارے ملتے ہیں

    جیون کی الجھی راہوں میں جب گھور اندھیرا آتا ہے

    ہاتھوں میں لئے روشن مشعل تو گرو ہمارے ملتے ہیں

    کاوشؔ کا یہی ہے افسانہ ہے نام علی کا دیوانہ

    دنیا کو علی کی چوکھٹ سے جینے کے سہارے ملتے ہیں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے