Sufinama

آپ معشوق کیا ہو گئے

پرنم الہ آبادی

آپ معشوق کیا ہو گئے

پرنم الہ آبادی

MORE BYپرنم الہ آبادی

    آپ معشوق کیا ہو گئے

    عاشقوں کے خدا ہو گئے

    تم کو اچھا مسلماں کیا

    اور کافر ادا ہو گئے

    چشم ساقی سے پی لی شراب

    شیخ جی پارسا ہو گئے

    اس نے میت پہ آ کر کہا

    تم تو سچ مچ خفا ہو گئے

    آ گئے میری میت پہ تم

    سارے وعدے وفا ہو گئے

    خیر اب کارواں کی نہیں

    راہزن رہنما ہو گئے

    اور کچھ غم نہیں غم یہ ہے

    آپ مل کر جدا ہو گئے

    پرنمؔ اس بے وفا کے لئے

    میرے آنسو دعا ہو گئے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY