Font by Mehr Nastaliq Web
Sufinama

وہ باتیں تری وہ فسانے ترے

عبدالحمید عدم

وہ باتیں تری وہ فسانے ترے

عبدالحمید عدم

MORE BYعبدالحمید عدم

    وہ باتیں تری وہ فسانے ترے

    شگفتہ شگفتہ بہانے ترے

    بس اک داغ سجدہ مری کائنات

    جبینیں تری آستانے ترے

    بس اک زخم نظارہ حصہ مرا

    بہاریں تری آشیانے ترے

    فقیروں کا جمگھٹ گھڑی دو گھڑی

    شرابیں تری بادہ خانے ترے

    ضمیر صدف میں کرن کا مقام

    انوکھے انوکھے ٹھکانے ترے

    بہار و خزاں کم نگاہوں کے وہم

    برے یا بھلے سب زمانے ترے

    عدمؔ بھی ہے تیرا حکایت کدہ

    کہاں تک گئے ہیں فسانے ترے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے