Font by Mehr Nastaliq Web
Sufinama

کہاں ہے جیب اور دامن کہاں ہے

عبدالطیف شوق

کہاں ہے جیب اور دامن کہاں ہے

عبدالطیف شوق

MORE BYعبدالطیف شوق

    کہاں ہے جیب اور دامن کہاں ہے

    جنوں سے پوچھ اب کیوں مہرباں ہے

    یقیناً آپ مجھ سے کچھ خفا ہیں

    زمیں دشمن ہے برہم آسماں ہے

    جھکی ہے یہ جبیں میری جہاں پر

    تمہارا ہی وہ سنگ آستاں ہے

    کشاکش ہے فلک میں اور زمیں میں

    ادھر بجلی ادھر اک آشیاں ہے

    پڑیں ہیں اشک کی بوندیں جو خط پر

    پڑھی جائے تو پڑھ لو داستاں ہے

    مأخذ :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے