Font by Mehr Nastaliq Web
Sufinama

چادر سے موج کے نہ چھپے چہرہ آپ کا

شاہ نیاز احمد بریلوی

چادر سے موج کے نہ چھپے چہرہ آپ کا

شاہ نیاز احمد بریلوی

MORE BYشاہ نیاز احمد بریلوی

    چادر سے موج کے نہ چھپے چہرہ آپ کا

    برقعہ حباب کا نہ ہو برقعہ حباب کا

    پہنا ہے کچھ تصرف اوہام ہے کہ ہم

    چہرہ پہ حق کے پاتے ہیں پردہ نقاب کا

    آنکھیں مندی ہوئی ہوں تو پھر دن بھی رات ہے

    اس میں قصور کیا ہے بھلا آفتاب کا

    کس کام یہ ہستیٔ موہوم کائنات

    سحر اب کب کرے تجھے دھوکہ شراب کا

    اپنا حجاب آپ ہے تو اے میاں نیازؔ

    اٹھنے میں تیرے ہوتا ہے اٹھنا حجاب کا

    مأخذ :
    • کتاب : دیوان نیاز بے نیاز (Pg. 128)
    • اشاعت : First

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے