Sufinama

اہل دیر و حرم رہ گئے

فناؔ نظامی

اہل دیر و حرم رہ گئے

فناؔ نظامی

MORE BYفناؔ نظامی

    اہل دیر و حرم رہ گئے

    ترے دیوانے کم رہ گئے

    منزلیں دور ہوتی گئیں

    فاصلے کم سے کم رہ گئے

    بے تکلف وہ اوروں سے ہیں

    ناز اٹھانے کو ہم رہ گئے

    جب بھی خط لکھنے بیٹھے انہیں

    صرف لے کر قلم رہ گئے

    دیکھ کر تیری تصویر کو

    آئینہ بن کے ہم رہ گئے

    میں نے ہر شے سنواری مگر

    ان کی زلفوں کے خم رہ گئے

    اے فناؔ تیری تقدیر میں

    ساری دنیا کے غم رہ گئے

    مآخذ:

    • کتاب : فناؔ نظامی ’’فن اور شخصیت‘ (Pg. 96)
    • Author : فنا نظامی
    • مطبع : جگر اکادمی، کانپور (2003)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY