Font by Mehr Nastaliq Web
Sufinama

اے عشق جلوہ گر ہے خود تجھ میں ذاتِ مولا

انشا اللہ خان

اے عشق جلوہ گر ہے خود تجھ میں ذاتِ مولا

انشا اللہ خان

MORE BYانشا اللہ خان

    اے عشق جلوہ گر ہے خود تجھ میں ذاتِ مولا

    والسابحاتِ سبحاً فالسابقاتِ سبقاً

    تم نے سکھا دیا کیا جبریل کو نہ جانے

    جھٹ زیر سدرہ ان نے جو بسترا جمایا

    جو شخص جبہ سا ہو خدمت میں یاں تمہاری

    کیوں کر نہ پھر وہ دیکھے لاہوت کا تماشا

    فرما دیں آپ جو کچھ حقا کہ وہ ہی سچ ہے

    اے میرے پیر و مرشد، ہاں بادشاہِ داتا

    سبزا اگر چڑھانا منظور، صبحِ دم، ہو

    تو لیجے برگ کوئی والناشطات نشطا

    ہے یاد میں تمہاری بیٹھا ہوا مراقب

    چارم فلک پہ عیسیٰ کھینچے ہوئے ادا سا

    کرو بیاں تمہیں سب کیوں پیشوا نہ سمجھیں

    روح القدس ہے ادنیٰ ایک بالکا تمہارا

    اتنا نہ پھٹکے پھریے، تشریف لائیے بھی

    حضرت سلامت انشاؔ ہے آپ ہی کا چیلا

    مأخذ :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے