Font by Mehr Nastaliq Web
Sufinama

عشق ستاتا ہے کیوں آ مجھے ہر آن تو

شاہ نیاز احمد بریلوی

عشق ستاتا ہے کیوں آ مجھے ہر آن تو

شاہ نیاز احمد بریلوی

MORE BYشاہ نیاز احمد بریلوی

    عشق ستاتا ہے کیوں آ مجھے ہر آن تو

    میرے تو آرام کا لے گیا سامان تو

    صبر و قرار شکیب تاب و تواں عقل و دیں

    سب نے تو لی اپنی راہ رہ گئی اک جان تو

    دیکھا نہیں ہے ہنوز چہرۂ دلدار کو

    کس کو تکے ہے بھلا دیدۂ حیران تو

    غم نے تو ہمدم بگاڑ دی مری سب حیثیت

    مانوں تجھے میں اگر لے مجھے پہچان تو

    پوچھے ہے ہر ایک سے کس کا ہے عاشق نیازؔ

    تجھ کو نہیں ہے خبر ایسا ہے انجان تو

    مأخذ :
    • کتاب : دیوان نیاز بے نیاز (Pg. 153)
    • اشاعت : First

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے