Sufinama

کس طرح چھوڑ دوں اے یار میں چاہت تیری

فنا بلند شہری

کس طرح چھوڑ دوں اے یار میں چاہت تیری

فنا بلند شہری

MORE BYفنا بلند شہری

    کس طرح چھوڑ دوں اے یار میں چاہت تیری

    میرے ایمان کا حاصل ہے محبت تیری

    جانے کیا بات ہے جلووں میں ترے جان جہاں

    یاد آتا ہے خدا دیکھ کے صورت تیری

    اب نگاہوں میں جچے گا نہ کوئی رنگ و جمال

    میری آنکھوں کو پسند آ گئی رنگت تیری

    اپنی قسمت پہ فرشتوں کی طرح ناز کروں

    مجھ پہ ہو جائے اگر چشم عنایت تیری

    حرم و دیر کے جلووں سے مجھے کیا مطلب

    شیشۂ دل میں اتر آئی ہے صورت تیری

    آستانے سے ترے سر نہ اٹھے گا میرا

    مدعا بن کے ملی ہے مجھے نسبت تیری

    میں فناؔ ہو کے پہنچ جاؤں گا تیرے در تک

    راہ دکھلانے لگی مجھ کو محبت تیری

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY