Font by Mehr Nastaliq Web
Sufinama

کچھ نہیں کھلتا مجھے میں کون ہوں

شاہ نیاز احمد بریلوی

کچھ نہیں کھلتا مجھے میں کون ہوں

شاہ نیاز احمد بریلوی

MORE BYشاہ نیاز احمد بریلوی

    کچھ نہیں کھلتا مجھے میں کون ہوں

    صورت حیرت ہوں یا شکل جنوں

    عشق ہے سرمایۂ دیوانگی

    سحر کب پاتا ہے اس کو اور فسوں

    آہ و نالہ نے مجھے رسوا کیا

    ورنہ پنہاں تھا مرا راز دروں

    گر نہ بہتے لخت دل آنکھوں کی راہ

    رشک اشک ایسا نہ ہوتا رشک خوں

    حسن جاناں جلوہ گر ہر شے میں ہے

    دید میں اپنے نہیں کوئی زبوں

    کون پا سکتا ہے مجھ گم گشتہ کو

    دین ڈھونڈھے آکے یا دنیائے دوں

    جس نے پہچانا ہے اپنے آپ کو

    ہے نیازؔ اپنے قدم پر سرنگوں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے