Sufinama

مائل بہ کرم مجھ پر ہو جائیں تو اچھا ہو

فنا بلند شہری

مائل بہ کرم مجھ پر ہو جائیں تو اچھا ہو

فنا بلند شہری

MORE BYفنا بلند شہری

    مائل بہ کرم مجھ پر ہو جائیں تو اچھا ہو

    مقبول مرے سجدے ہو جائیں تو اچھا ہو

    اس دشت نوردی سے پیچھا تو کہیں چھوٹے

    ہم کوچۂ جاناں میں مر جائیں تو اچھا ہو

    سر ہو در جاناں پہ دم اپنا نکل جائے

    یہ کام محبت میں کر جائیں تو اچھا ہو

    یوں تو سبھی آئے ہیں دفنانے مجھے لیکن

    وہ بھی مری میت پہ آ جائیں تو اچھا ہو

    پھر درد جدائی کا جھگڑا نہ رہے کوئی

    ہم نام ترا لے کر مر جائیں تو اچھا ہو

    دیکھیں نہ کسی کو ہم پھر دیکھ کے رخ تیرا

    دیدار ترا کر کے مر جائیں تو اچھا ہو

    رہ جائے محبت کا دنیا میں بھرم کچھ تو

    دو پھول ہی تربت پہ دھر جائیں تو اچھا ہو

    دھڑکا لگا رہتا ہے ہر وقت بلاؤں کا

    ہم ساتھ نشیمن کے جل جائیں تو اچھا ہو

    بدنام ہی کرنے کو آئیں وہ مگر آئیں

    وہ اتنا کرم مجھ پر کر جائیں تو اچھا ہو

    جا سکتے ہیں جانے کو ہم چل کے فناؔ دیکھیں

    وہ خود ہمیں محفل میں بلوائیں تو اچھا ہو

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY