Sufinama

مرے داغ دل وہ چراغ ہیں نہیں نسبتیں جنہیں شام سے

فنا بلند شہری

مرے داغ دل وہ چراغ ہیں نہیں نسبتیں جنہیں شام سے

فنا بلند شہری

MORE BYفنا بلند شہری

    مرے داغ دل وہ چراغ ہیں نہیں نسبتیں جنہیں شام سے

    انہیں تو ہی آ کے بجھائے گا یہ جلے ہیں تیرے ہی نام سے

    میں ہوں ایک عاشق بے نوا تو نواز اپنے پیام سے

    یہ تری رضا پہ تری خوشی تو پکار لے کسی نام سے

    میں تو گم ہوں تیری تلاش میں مجھے کون جانے ترے سوا

    کوئی کیسے محرم راز ہو تری عاشقی کے مقام سے

    ترا عشق ہے مری زندگی ترا ذکر ہے مری بندگی

    تجھے یاد کرتا ہوں میں صدا مجھے کام ہے اسی کام سے

    کبھی مے کدے پہ جو دل رہا ترے عاشقوں کی نظر پڑے

    اسے کہئے بادۂ معرفت جو چھلک پڑے ابھی جام سے

    کہیں اٹھ کے جاؤں میں کیوں فناؔ کہ پیام اس کا ملا مجھے

    جو ملا کبھی تو ملے گا وہ مجھے درد دل کے مقام سے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY