Sufinama

مجھ کو دنیا کے ہر اک غم سے چھڑا رکھا ہے

فنا بلند شہری

مجھ کو دنیا کے ہر اک غم سے چھڑا رکھا ہے

فنا بلند شہری

MORE BYفنا بلند شہری

    مجھ کو دنیا کے ہر اک غم سے چھڑا رکھا ہے

    جلوۂ یار نے مدہوش بنا رکھا ہے

    موت سے آپ کی الفت نے بچا رکھا ہے

    ورنہ بیمار غم ہجر میں کیا رکھا ہے

    عرصۂ حشر میں رسوائی یقینی تھی مگر

    تیری رحمت نے ہر اک جرم چھپا رکھا ہے

    منزل دیر و حرم چھوڑ کے اے جان جہاں

    میں نے کعبہ تیری چوکھٹ کو بنا رکھا ہے

    جذبۂ عشق میں تکمیل عبادت کے لئے

    میں نے سر یار کے قدموں میں جھکا رکھا ہے

    تیرے جلووں کی یہ شوخی ارے توبہ توبہ

    ہوش موسیٰ کا سر طور اٹھا رکھا ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY