Sufinama

نکلے وہ پھول بن کے ترے گلستاں سے ہم

فنا بلند شہری

نکلے وہ پھول بن کے ترے گلستاں سے ہم

فنا بلند شہری

MORE BYفنا بلند شہری

    نکلے وہ پھول بن کے ترے گلستاں سے ہم

    مہکا دیا فضاؤں کو گزرے جہاں سے ہم

    اب تو یہی حریم محبت ہے اے صنم

    جائیں کہاں اب اٹھ کے ترے آستاں سے ہم

    دنیا میں اب کہیں بھی ٹھہرتی نہیں نظر

    تجھ سا حسین لائیں تو لائیں کہاں سے ہم

    دل لے کے جس نے درد محبت عطا کیا

    مانگیں گے اب دوا بھی اسی مہرباں سے ہم

    دامن میں کچھ تو ڈال دے اپنے کرم کی بھیک

    دامن تہی نہ جائیں گے اس آستاں سے ہم

    تیرا کرم رہا جو رہ عشق میں صنم

    اک روز آ ملیں گے ترے کارواں سے ہم

    لکھی ہوئی تھی قید عناصر نصیب میں

    لے کر چلے ہیں اپنا قفس آشیاں سے ہم

    راہ جنوں میں کھلنے لگے عاشقی کہ پھول

    ان کے کرم کے سائے میں گزرے جہاں سے ہم

    ٹھکرائیں یا نواز لیں وہ ہم کو اے فناؔ

    شکوہ کبھی کریں گے نہ اپنی زباں سے ہم

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY