Font by Mehr Nastaliq Web
Sufinama

پاؤں نہ دور دور بھی اپنی خبر کو میں

حیرت شاہ وارثی

پاؤں نہ دور دور بھی اپنی خبر کو میں

حیرت شاہ وارثی

MORE BYحیرت شاہ وارثی

    پاؤں نہ دور دور بھی اپنی خبر کو میں

    پھر ڈھونڈھتا ہوں آپ کی پہلی نظر کو میں

    اک اک نگہ میں سینکڑوں تیروں کے وار ہیں

    رکھوں کہاں سنبھال کے قلب و جگر کو میں

    ایسے گئے کہ زندگی کی شام ہو گئی

    لاؤں کہاں سے ڈھونڈ کے گزری سحر کو میں

    مدت میں جلوہ گر ہوئے بالائے بام وہ

    اس چاند کو میں دیکھوں کہ دیکھوں قمر کو میں

    حیرتؔ نگاہ یار نے نہ جانے کیا کیا

    حیراں ہوں اب کہاں رہوں جاؤں کدھر کو میں

    مأخذ :
    • کتاب : تذکرہ شعرائے وارثیہ (Pg. 129)
    • مطبع : فائن بکس پرنٹرس (1993)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے