Font by Mehr Nastaliq Web
Sufinama

اے آفتاب عالم ہر جا ہے نور تیرا

شاہ کبیر داناپوری

اے آفتاب عالم ہر جا ہے نور تیرا

شاہ کبیر داناپوری

MORE BYشاہ کبیر داناپوری

    اے آفتاب عالم ہر جا ہے نور تیرا

    ہر ذرہ میں چمکتا کیسا ہے نور تیرا

    تو شمع ہے منور فانوس کے ہے اندر

    محفل میں سارے لیکن پھیلا ہے نور تیرا

    تو ہے چراغ روشن عالم میں جلوہ افگن

    خلوت میں بزم میں بھی چھایا ہے نور تیرا

    روشن ہیں تجھ سے اختر شمس و قمر ہیں انور

    ہر شان میں منور کیا کیا ہے نور تیرا

    پہونچے جو طور سینا موسیٰ ابن عمران

    صورت میں نخل کے وان بولا ہے نور تیرا

    کچھ بھی نہیں ہے عرفانؔ واللہ ثم باللہ

    گر ہے حباب در ہے دریا ہے نور تیرا

    مأخذ :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے