Sufinama

یہ جو لگا ہے تیر مجھے اے کمان عشق

شاہ رکن الدین عشقؔ

یہ جو لگا ہے تیر مجھے اے کمان عشق

شاہ رکن الدین عشقؔ

MORE BY شاہ رکن الدین عشقؔ

    یہ جو لگا ہے تیر مجھے اے کمان عشق

    محشر میں دیکھیو یہی ہوگا نشان عشق

    سر کھینچے آہ خاک سے میری جو مثل نے

    ہے کیا عجب کہ ہوں میں شہید سنان عشق

    مقدور کیا جو کہہ سکوں کچھ رمز عشق کو

    جوں شمع ہوں اگرچہ سراپا زبان عشق

    پرویز نے مٹانے میں تقصیر تو نہ کی

    رہ گئی زبان تیشہ پہ یہ داستان عشق

    دل کھونے پر جو روتے ہو اے ہمدمو عبث

    ٹک آنکھ کھول دیکھو کہ جاتا ہے جان عشق

    مآخذ:

    • Book: کلیات رکن الدین عشقؔ اور ان کی حیات و شاعری (Pg. 129)
    • Author: قریشہ حسین
    • مطبع: دی آزاد پریس، پٹنہ (1979)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY