Sufinama

پھولے ہے گرچہ باغ میں بلبل ہزار شاخ

شاہ رکن الدین عشقؔ

پھولے ہے گرچہ باغ میں بلبل ہزار شاخ

شاہ رکن الدین عشقؔ

MORE BY شاہ رکن الدین عشقؔ

    پھولے ہے گرچہ باغ میں بلبل ہزار شاخ

    اس سرو قد کو دیکھے تو ہو شرمسار شاخ

    دو دن کے برگ و بار پر بلبل نہ کر غرور

    آخر خزاں میں ہوئے گی جوں چوب دار شاخ

    لوٹے گا سب بہار تری شحنۂ خزاں

    بلبل پر کر لے تو زر گل کو نثار شاخ

    چلتے ہیں تجھ پہ سنگ حوادث اسی لئے

    محفوظ وہ ہے جو نہ رکھے برگ و بار شاخ

    خواہش ہے آگ کی تو تکلف کو دور کر

    دیکھی ہے عشقؔ جلتی کبھی میوہ دار شاخ

    مآخذ:

    • Book: کلیات رکن الدین عشقؔ اور ان کی حیات و شاعری (Pg. 94)
    • Author: قریشہ حسین
    • مطبع: دی آزاد پریس، پٹنہ (1979)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY