Font by Mehr Nastaliq Web
Sufinama

جب ہوئی چشمِ حقیقت کی ضیا حاصل ہمیں

تصدق علی اسد

جب ہوئی چشمِ حقیقت کی ضیا حاصل ہمیں

تصدق علی اسد

MORE BYتصدق علی اسد

    جب ہوئی چشمِ حقیقت کی ضیا حاصل ہمیں

    ایک ساں آئے نظر ناقابلِ و قابل ہمیں

    کچھ نہ پایا ہم نے آخر ایک دانہ کے سوا

    کشت زارِ عشق سے یہ ہی ہوا حاصل ہمیں

    اس ظہور گاہ میں ہر شئے کو دیکھا غور سے

    خاک کا پتلہ ہی بس آیا نظر کامل ہمیں

    پڑ چکی ہے کان میں اِنّی انا کی جب ندا

    ہے نہیں رکھنا روا پھر خود کو ہی شامل ہمیں

    کس لئے کعبہ کو جائیں چھوڑ کر بیت الصّنم

    عین حق ثابت ہوا آخر یہی باطل ہمیں

    مأخذ :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے