Sufinama

ترا خیال کر کے دل نشیں میں نے

عنبر وارثی

ترا خیال کر کے دل نشیں میں نے

عنبر وارثی

MORE BYعنبر وارثی

    ترا خیال کر کے دل نشیں میں نے

    مٹا دیا ہے جو تھا فرق کفر و دیں میں نے

    محبت اور محبت میں وسوسے دل کے

    بنایا خود ہی زمانہ کو نکتہ چیں میں نے

    جنون عشق پہ اب دیکھیں کیا کہے دنیا

    بنا لیا ہے گریباں کو آستیں میں نے

    ہزار ہے مہ و انجم میں جلوہ نگیں

    تیرا جواب نہ پایا مگر کہیں میں نے

    سجود شوق پہ دنیا کو کیوں یہ حیرت ہے

    چمکتے ذروں پہ رکھ دی اگر جبیں میں نے

    مأخذ :
    • کتاب : تذکرہ شعرائے وارثیہ (Pg. 204)
    • مطبع : فائن بکس پرنٹرس (1993)
    • اشاعت : First

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY