Sufinama

جب کبھی عشق کا سامان نظر آتا ہے

وجیہؔ رام پوری

جب کبھی عشق کا سامان نظر آتا ہے

وجیہؔ رام پوری

MORE BYوجیہؔ رام پوری

    جب کبھی عشق کا سامان نظر آتا ہے

    خانۂ دل میں کوئی آگ لگا جاتا ہے

    میں نے مانا کہ برے وقت کا مارا ہوں میں

    دل پُر غم کو تری یاد سے چین آتا ہے

    آب حیواں کا اثر خضر اٹھا کر رکھیں

    جینا کیا ہے ہمیں مرنے میں مزا آتا ہے

    تیرے ہونٹوں پہ فدا تیرے تبسم پہ نثار

    مسکرانے سے ترے چاند بھی شرماتا ہے

    واعظا قرب خدا سخت کٹھن ہے منزل

    یہ عطیہ ہے جو قسمت ہی سے مل پاتا ہے

    پسِ پردہ ہے کوئی قوت مقناطیسی

    عشق بے ساختہ چلمن سے ملا جاتا ہے

    ہم بھی اک آس لگائے ہوئے بیٹھے ہیں وجیہؔ

    اسی امید میں جینے کا مزہ آتا ہے

    مأخذ :
    • کتاب : دیوان وجیہ (Pg. 152)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY