Sufinama

وہ آشنائے منزل عرفاں ہوا نہیں

فنا بلند شہری

وہ آشنائے منزل عرفاں ہوا نہیں

فنا بلند شہری

MORE BYفنا بلند شہری

    وہ آشنائے منزل عرفاں ہوا نہیں

    جس کو ترے کرم کا سہارا ملا نہیں

    دیکھا بہت نگاہ طلب کو ملا نہیں

    تم سے تم ہی ہو تم سا کوئی دوسرا نہیں

    جاؤں تو اٹھ کے جاؤں کہاں تیرے در سے میں

    تیرے سوا کسی کو بھی دل مانتا نہیں

    تیرا کرم متاع دو عالم مرے لئے

    تیرا کرم رہے تو دو عالم میں کیا نہیں

    دست طلب بڑھے تو ملے پھر کرم کی بھیک

    ان کی عطا نے یہ بھی گوارہ کیا نہیں

    میں بھی فقیر در ہوں مجھے بھی نواز دو

    مایوس کوئی در سے تمہارے گیا نہیں

    تکمیل بندگی نہ ہوئی مجھ سے اے فناؔ

    جب تک در حبیب پہ سجدہ کیا نہیں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY