Font by Mehr Nastaliq Web
Sufinama

اب ہیں غلام آفریں مدرسہ و خانقاہ

سیماب اکبرآبادی

اب ہیں غلام آفریں مدرسہ و خانقاہ

سیماب اکبرآبادی

MORE BYسیماب اکبرآبادی

    اب ہیں غلام آفریں مدرسہ و خانقاہ

    مطلع مشرق پہ ہے خندۂ مغرب گواہ

    لالہ و برگ و گیاہ انجم و خورشید و ماہ

    منزل مقصود تک سینکڑوں ہیں سنگ راہ

    علم کے پردے میں بھی چھپ نہیں سکتا گناہ

    درس شبی ہو گیا پردہ در خانقاہ

    تیری نگہ قیدیٔ طرۂ و تاج و کلاہ

    میری نظر شہپر اشہد ان لا الٰہ

    میرے لئے وارثیؔ دو ہی پناہیں تو ہیں

    مغفرت بے حساب معصیت بے پناہ

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے