Font by Mehr Nastaliq Web
Sufinama

دل نے ہمارے بیٹھے بیٹھے کیسے کیسے روگ لگائے

ابن انشا

دل نے ہمارے بیٹھے بیٹھے کیسے کیسے روگ لگائے

ابن انشا

MORE BYابن انشا

    دل نے ہمارے بیٹھے بیٹھے کیسے کیسے روگ لگائے

    تم نے کسی کا نام لیا اور آنکھوں میں اپنی آنسو آئے

    جتنی زبانیں اتنے قصے اپنی اداسی کے کارن

    لیکن لوگ ابھی تک یہ سادہ سی پہیلی بوجھ نہ پائے

    عشق کیا ہے کس سے کیا ہے کب سے کیا ہے کیسے کیا ہے

    لوگوں کو اک بات ملی اپنے کو تو لیکن رونا آئے

    راہ میں یوں ہی چلتے چلتے ان کا دامن تھام لیا تھا

    ہم ان سے کچھ مانگیں چاہے ہم سے تو یہ سوچا بھی نہ جائے

    نجم سحر کے چہرے سے انشاؔ اتنی بھی امیدیں نہ لگاؤ

    ایسا بھی ہم نے دیکھا ہے اکثر رات کٹے اور صبح نہ آئے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    نصرت فتح علی خان

    نصرت فتح علی خان

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے