Sufinama

جب رخ حسن سے نقاب اٹھا

احسان دانش

جب رخ حسن سے نقاب اٹھا

احسان دانش

MORE BYاحسان دانش

    جب رخ حسن سے نقاب اٹھا

    بن کے ہر ذرہ آفتاب اٹھا

    ڈوبی جاتی ہے ضبط کی کشتی

    دل میں طوفان اضطراب اٹھا

    مرنے والے فنا بھی پردہ ہے

    اٹھ سکے گر تو یہ حجاب اٹھا

    شاہد مئے کی خلوتوں میں پہنچ

    پردۂ نشۂ شراب اٹھا

    ہم تو آنکھوں کا نور کھو بیٹھے

    ان کے چہرے سے کیا نقاب اٹھا

    عالم حسن سادگی توبہ

    عشق کھا کھا کے پیچ و تاب اٹھا

    ہوش نقص خودی ہے اے احسانؔ

    لا اٹھا شیشۂ شراب اٹھا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY