Font by Mehr Nastaliq Web
Sufinama

فریب آگہی سے وجد میں ہے رازداں میرا

سیماب اکبرآبادی

فریب آگہی سے وجد میں ہے رازداں میرا

سیماب اکبرآبادی

MORE BYسیماب اکبرآبادی

    فریب آگہی سے وجد میں ہے رازداں میرا

    کہ جیسے اس کے دل کی چوٹ ہے درد نہاں میرا

    کروں پھر عرض جلوۂ حوصلہ اتنا کہاں میرا

    فراز طور پر ہو تو چکا ہے امتحاں میرا

    میں کیوں صبح ازل سے قصد کرتا شام ہستی کا

    نہ تھا معلوم اتنا وقت ہوگا رائیگاں میرا

    میں اپنی جان دوں گا حسن سے عہد وفا لے کر

    اجل پہلے سے سن رکھے کہ سودا ہے گراں میرا

    نہیں احساس اے سیمابؔ مجھ کو عہد پیری کا

    خدا رکھے ابھی تو جذبۂ دل ہے جواں میرا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے