Font by Mehr Nastaliq Web
Sufinama

فنا پر اعتبار زندگی مشکل سمجھتا ہوں

سیماب اکبرآبادی

فنا پر اعتبار زندگی مشکل سمجھتا ہوں

سیماب اکبرآبادی

MORE BYسیماب اکبرآبادی

    فنا پر اعتبار زندگی مشکل سمجھتا ہوں

    وہاں مدفن نکلتا ہے جہاں محفل سمجھتا ہوں

    نہفتہ خاک محفل میں بھی اک محفل سمجھتا ہوں

    ہر اک ذرے کو اک منزل رسیدہ دل سمجھتا ہوں

    محبت دل کو مارے یا جلائے حق بہ جانب ہے

    محبت ہی کو میں پروردگار دل سمجھتا ہوں

    ہزاروں منزلیں طے کر چکا اب اپنی ہستی کو

    بہ قدر ہر نفس آسودۂ منزل سمجھتا ہوں

    وہی سب سے بڑی نعمت ہے جو مل جائے بے مانگے

    سکون دل سے بہتر اضطراب دل سمجھتا ہوں

    حریم حسن فردوس محبت کعبہ فطرت

    خدا جانے وہ کیا کیا ہے جسے میں دل سمجھتا ہوں

    پۓ تکمیل اے سیمابؔ آئے اہل دل کوئی

    میں دنیا کو حدیث نا تمام دل سمجھتا ہوں

    مأخذ :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے