Font by Mehr Nastaliq Web
Sufinama

تمہارے عشق میں گر جان کے دینے سے میں اڑتا

شاہ نیاز احمد بریلوی

تمہارے عشق میں گر جان کے دینے سے میں اڑتا

شاہ نیاز احمد بریلوی

MORE BYشاہ نیاز احمد بریلوی

    تمہارے عشق میں گر جان کے دینے سے میں اڑتا

    کوئی دن جی کے آخر موت سے مرنا ہی پھر پڑتا

    کہاں یہ عشق کا مرنا کہاں وہ موت سر پڑنا

    یہاں اب روح قدسی ہوں وہاں زیر زمیں سڑنا

    زیارت گاہ عالم آج ہے یارو مزار اپنا

    کہو حاسد کو تو بھی ساتھ میرے آ یہاں گڑنا

    اگر پروانہ بلبل کی طرح مرنے سے تھم رہتا

    یہ رونا شمع کو اس کے لیے تا صبح کیوں پڑتا

    یہ سنگینی و سبکی تیری واعط سب پہ کھل جاتی

    ترازوئے محبت میں اگر آ کر کے تو تڑتا

    نیازؔ آخر ترا دل تخت رب العالمین ہوتا

    خس و خاشاک غفلت سے اگر یہ خوب سا جھڑتا

    مأخذ :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے