Font by Mehr Nastaliq Web
Sufinama

اسم ظاہر سے ترے جو کہ خبردار ہوا

تصدق علی اسد

اسم ظاہر سے ترے جو کہ خبردار ہوا

تصدق علی اسد

MORE BYتصدق علی اسد

    اسم ظاہر سے ترے جو کہ خبردار ہوا

    تا ابد دید سے پھر اپنی وہ بیزار ہوا

    تیری وحدت میں خریداری کا دعوی کس کو

    حسن کا اپنے تو ہی آپ خریدار ہوا

    خود کو کھو کے نہ لیا جس نے کبھی نام اللہ

    حق اگر پوچھو وہی مخزن اسرار ہوا

    ایک موسیٰ ہی نہیں رہ گئے سارے محروم

    برملا کس کو اسدؔ کب مرا دیدار ہوا

    مأخذ :
    • کتاب : Rooh-e-Sama, Part 2 (Pg. 13)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے