Sufinama

یہی اب فیصلۂ جنگجو ہے

اوگھٹ شاہ وارثی

یہی اب فیصلۂ جنگجو ہے

اوگھٹ شاہ وارثی

MORE BY اوگھٹ شاہ وارثی

    یہی اب فیصلۂ جنگجو ہے

    تیرا خنجر ہے اور میرا گلو ہے

    ہوئے ہیں گھر سے بے گھر اس جنوں میں

    مکین لا مکاں کی جستجو ہے

    عیاں ہر رنگ میں ہے تیرا جلوہ

    بسی ہر گل میں جاناں تیری بو ہے

    نماز اپنی ہے بس تیرا تصور

    تمہارے واسطے رونا وضو ہے

    شہ وارثؔ کا جلوہ دیکھ کر ہم

    کہے اوگھٹؔ نہ کیوں کر تو ہی تو ہے

    مآخذ:

    • Book: فیضان وارثی المعروف زمزمۂ قوالی (Pg. 24)
    • Author: اوگھٹ شاہ وارثی
    • مطبع: جید برقی پریس، دہلی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY