Sufinama

ذرا سنتا نہیں کہنا کسی کا

اوگھٹ شاہ وارثی

ذرا سنتا نہیں کہنا کسی کا

اوگھٹ شاہ وارثی

MORE BY اوگھٹ شاہ وارثی

    ذرا سنتا نہیں کہنا کسی کا

    دل ناداں کو ہے سودا کسی کا

    حسینوں کو جہاں میں کون پوچھے

    زمانہ ہو گیا شیدا کسی کا

    حرم میں بت کدہ میں ہم کو واعظ

    نظر آتا ہے اک جلوہ کسی کا

    خدا شاہد نہیں تقصیر میری

    ہوا دل خود بہ خود بندہ کسی کا

    سنا ہے آج کل دیر و حرم میں

    ہوا کرتا ہے پھر چرچا کسی کا

    تصور میں سدا رہتا ہے اوگھٹؔ

    قد بالا رخ زیبا کسی کا

    مآخذ:

    • Book : فیضان وارثی المعروف زمزمۂ قوالی (Pg. 13)
    • Author : اوگھٹ شاہ وارثی
    • مطبع : جید برقی پریس، دہلی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY