Font by Mehr Nastaliq Web
Sufinama

چاند کو آپ سے چاندنی مل گئی اور سورج کو بھی روشنی مل گئی

جوہر نوری

چاند کو آپ سے چاندنی مل گئی اور سورج کو بھی روشنی مل گئی

جوہر نوری

MORE BYجوہر نوری

    چاند کو آپؐ سے چاندنی مل گئی اور سورج کو بھی روشنی مل گئی

    آپؐ ہی کی بدولت خدا کی قسم آدمی کو نئی زندگی مل گئی

    اب کہاں رہ گیا فرق شاہ و گدا اب رہا کوئی چھوٹا نہ کوئی بڑا

    یہ کرشمہ نظام محمد کا ہے کہ غلاموں کو بھی سروری مل گئی

    کفر و ظلمت کی چھائی ہوئی تھی گھٹا تیرگی تیرگی ہر طرف تھی عیاں

    آپؐ تشریف لائے جو سوئے جہاں ذرہ ذرہ کو ہے روشنی مل گئی

    راحت انس و جاں سرور دو جہاں آپؐ کا مرتبہ کیا کروں میں بیاں

    نام جب بھی لیا آپؐ کا زیر لب کس قدر دل کو میرے خوشی مل گئی

    درد میں رنج میں فکر و افکار میں بے کسی بے بسی کرب و آزار میں

    جب پکارا ہے جوہرؔ مدد کے لئے ہاں مدد آپؐ کی اس گھڑی مل گئی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے