Font by Mehr Nastaliq Web
Sufinama

چاند_سورج کی بھی روشنی ماند ہے جلوۂ_روئے_ابرار کے سامنے

جوہر نوری

چاند_سورج کی بھی روشنی ماند ہے جلوۂ_روئے_ابرار کے سامنے

جوہر نوری

MORE BYجوہر نوری

    چاند سورج کی بھی روشنی ماند ہے جلوۂ روئے ابرار کے سامنے

    مشک عنبر کی بھی کچھ حقیقت نہیں مرے خوشبوئے سرکار کے سمانے

    میں نہ چھوڑوں کبھی دامن مصطفیٰ آ بھی جائے اگر سر پہ میری قضا

    جھک چکا سر جو پیش حبیب خدا کیا جھکے گا وہ کفار کے سامنے

    نکلے فاروق گھر سے یہ کھا کر قسم آپؐ کے سر مبارک کو کرنے قلم

    چار آنکھیں ہوئی جس گھڑی آپؐ سے تاب لائے نہ سرکار کے سامنے

    تھی نگہہ برق سے بھی کہیں تیز تر میرے سرکار کی دور بیں تھی نظر

    ماہ و خورشید کی کچھ حقیقت نہیں جلوئے روئے ابرار کے سامنے

    آپؐ تو ہیں شہنشاہ ہر دو جہاں آپؐ کی ہے زمیں آپؐ کا آسماں

    چاند سورج ستارے اور کہکشاں سب ہیں بے نور سرکار کے سامنے

    یہ ترقی ہے جوہرؔ ترقی نہیں چاند پر ہے پہنچنے کی کیسی خوشی

    ایک پل کی مسافت سے بھی ہے کم میرے پرواز سرکار کے سامنے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے