Font by Mehr Nastaliq Web
Sufinama

ترے صدقے ترے قربان جاؤں یا رسول اللہ

امیر بخش صابری

ترے صدقے ترے قربان جاؤں یا رسول اللہ

امیر بخش صابری

MORE BYامیر بخش صابری

    ترے صدقے ترے قربان جاؤں یا رسول اللہ

    دو عالم میں نہ کوئی تم سا پاؤں یا رسول اللہ

    بھلا کیوں غیر کو نظروں میں لاؤں یا رسول اللہ

    تمہارا ہوں تمہارے در پہ آؤں یا رسول اللہ

    کہانی خود زبانی آسناؤں یا رسول اللہ

    مری فریاد سن لو حضرت حسین کا صدقہ

    علی شیرِ خدا کے عین نورالعین کا صدقہ

    جنابِ فاطمہ کے خاص دل کے چین کا صدقہ

    عطا مجھ کو بھی ہو کچھ دولتِ کونین کا صدقہ

    کہاں تک ٹھوکریں غیروں کی کھاؤں یا رسول اللہ

    تمہارے گنبدِ خضرا کی جس دم یاد آتی ہے

    دلِ بیتاب پر گویا قیامت اک ڈھاتی ہے

    نہ ویرانے میں رہتا ہوں نہ بستی مجھ کو بھاتی ہے

    مرے ارمانوں کی دنیا ہوئی برباد جاتی ہے

    کہاں تک ہجر کے صدمے اٹھاؤں یا رسول اللہ

    مدینے جانے والے مرے دل کو تھام لیتا جا

    ہوا ہے عشق میں جو کچھ مرا ا نجام لیتا جا

    یہ منزل عشق کی ہے بوسۂ ہر گام لیتا جا

    امیرِؔ صابری کا دکھ بھرا پیغام لیتا جا

    بلاؤ تو لگی دل کی بجھاؤں یا رسول اللہ

    مأخذ :
    • کتاب : Kalaam-e-Ameer Sabri (Pg. 101)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے