Sufinama
Dadu Saheb's Photo'

دادو صاحب

1544 - 1603 | بھارت

دادو میں بھشیاری منگتا درسن دیہو دیال

تم داتا دُکھ بھنجتا میری کرہو سنبھال

بھورے بھورے تن کرے ونڈے کری کربان

میٹھا کوڑا نا لگئے دادو توہو سان

آگیا اپرمپار کی بسی عنبر بھرتار

ہرے پٹرمبر پہری کری دھرتی کرئے سنگار

دادو آسک رب دع سر بھی دیوے لاہی

اللہ کارنی آپ کوں سانڈے اندری بھاہی

موئے پیڑ پکارتاں بید نہ ملیا آئی

دادو تھوڑی بات تھی جے ٹک درس دکھائ

دادو درونے دردوند یہو دل درد نہ جائ

ہم دکھیا دیدار کے مہربان دکھلایٔ